منگل, 19 جنوری 2021


تیسرے میچ کے لئے پاکستان پرعزم

 

ایمز ٹی وی (اسپورٹس) پاکستان کوآسٹریلیا کیخلاف پہلے ون ڈے میں شکست ہوئی تاہم گرین شرٹس نے باؤنس بیک کرتے ہوئے محمد حفیظ کی قیادت میں کینگروز کو دوسرے میچ میں 6وکٹوں سے مات دیکر سیریز1-1سے برابرکر دی۔ کینگروز کیخلاف تیسرے معرکہ کیلئے قومی ٹیم نے پرتھ میں ڈیرے ڈال لئے، کھلاڑی ایک روز آرام کے بعد منگل سے ٹریننگ کا آغاز کریں گے۔ ریگولر کپتان اظہر علی کی ہیمسٹرنگ انجری کے باعث تیسرے میچ میں شرکت بھی مشکوک ہے ،تیسرے ون ڈے کیلئے وننگ کمبی نیشن برقرار رکھے جانیکا امکان ہے۔پاکستانی ٹیم پیر کو چار گھنٹے سے زائد کی فلائٹ سے پرتھ پہنچی۔ٹیم منیجر وسیم باری نے کہا کہ منگل کی صبح 9 بجے پریکٹس سیشن سے کھلاڑی پرتھ کی کنڈیشنز سے ہم آہنگ ہونے کی کوشش کریں گے، دوسرے ون ڈے میں کامیابی نے مورال بلند کر دیا اور اب سیریز اپنے نام کرنے کیلیے پْرعزم ہیں۔ انھوں نے کہا کہ تازہ دم ون ڈے اسپیشلسٹ کھلاڑیوں کے آنے سے ٹیم مزید مضبوط ہو گئی اور سب کی نگاہیں تاریخ رقم کرنے پر ہیں، ایک سوال پر انھوں نے کہا کہ کپتان اظہر علی کی حالت میں بہتری تاہم وہ تاحال ہیمسٹرنگ انجری سے مکمل نجات حاصل نہیں کر سکے ہیں، ان کی ری ہیبلی ٹیشن کا کام جاری ہے، تیسرے ون ڈے میں تو وہ حصہ نہیں لے سکتے البتہ آخری دونوں میچز کیلیے واپسی کا امکان ہے۔ پاکستان اورآسٹریلیا کے درمیان تیسرا میچ جمعرات کو واکا گراؤنڈ پر کھیلا جائیگا۔ پاکستان ٹیم پرتھ میں 18 میچزکھیل چکی ہے جس میں سے اس نے9میں فتح سمیٹی جبکہ اتنے ہی میچزمیں شکست کا سامنا کرناپڑا۔ پاکستان کیلئے اچھی خبر ہے کہ میچ کیلئے کینگروز کو تین اہم کھلاڑی دستیاب نہیں ہوں گے۔ ابتدائی دومیچوں میں ٹیم کا حصہ رہنے والے آل راؤنڈر مچل مارش زخمی ہوکر سیریز سے باہر ہوگئے ہیں۔آسٹریلیا کے کرکٹ بورڈ کا کہنا ہے کہ کندھے کی انجری کا شکار مچل مارش پاکستان کے خلاف سیریز کے دیگر میچوں میں ٹیم کا حصہ نہیں ہوں گے جبکہ انھیں بھارت کے دورے کے لیے اعلان کردہ 16 رکنی ٹیم میں بھی شامل کیا گیا ہے۔ مچل مارش، میلبرن میں پاکستان کے خلاف سیریز کے دوسرے میچ میں کندھے میں درد کے باعث بولنگ نہیں کرسکے تھے۔ بورڈ کے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ مکمل فٹنس کے ساتھ واپسی کے لیے انھیں بحالی اور آرام کے لیے کچھ وقت درکار ہے۔ آسٹریلیا نے مارش کے متبادل کے طور پر کسی کھلاڑی کو شامل نہیں کیا ہے تاہم برسبین میں زخمی ہونے والے کرس لین کی جگہ پیٹر ہینڈز کومب کو ٹیم کا حصہ بنایا گیا ہے۔ کرس لین کی آخری دومیچوں میں شرکت بھی واضح نہیں ہے جبکہ پرتھ میں ہونے والے تیسرے میچ کے لیے فاسٹ بولر مچل اسٹارک کو بھی آرام کا موقع دیا گیا ہے۔ آسٹریلیا کے چیف سلیکٹر ٹریوس ہونز کا کہنا ہے کہ مچل اسٹارک نے مصروف چھ مہینے گزارے ہیں اور بہت کرکٹ کھیلی ہے۔ ہمیں اس بات کا خیال رکھنا ہے کہ انھیں آرام کرنے کا موقع ملے اور آئندہ مہینوں میں ان کے شیڈول کو دیکھتے ہوئے ہم سمجھتے ہیں کہ ان کو آرام دینے کا یہی بہتر موقع ہے۔ نوجوان بیٹسمین کرس لن گردن میں تکلیف کے باعث پرتھ میں تیسرا ایک روزہ میچ نہیں کھیلیں گے۔ کندھے کی تکلیف میں مبتلا آ ل راؤنڈرمچل مارش کے متعلق فزیو تھیراپسٹ ڈیوڈ بیکلی نے بتایا کہ مچل مارش کے کندھے کی تکلیف میں اضافہ ہوگیا ہے اس لیے انہیں مکمل فٹنس حاصل کرنے کے لئے مکمل آرام اورعلاج کی ضرورت ہے۔ مارش پاکستان کے خلاف مزید تین ایک روزہ میچز میں حصہ نہیں لیں گے تاہم ان کا نام آئندہ ماہ ہونے والے دورہ بھارت کیلئے 16 رکنی اسکواڈ میں شامل ہے۔ مچل مارش کے متبادل کے طور پر مارکس اسٹوئنز کا نام شامل کیا گیا ہے۔

 

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment