ھفتہ, 01 اکتوبر 2022


جےایس ایم یو،اشتعال انگزیزی سےنمٹنےکیلئےماسٹرٹرینرزٹریننگ کاانعقاد

کراچی: جناح سندھ میڈیکل یونیورسٹی کے اپنا انسٹیٹیوٹ آف پبلک ہیلتھ کی جانب سےدو روزہ ’’ماسٹر ٹرینرز ٹریننگ ‘‘کا انعقاد کیا گیا ۔

جس میں اساتذہ کو اشعال انگیزی، انتشار و تشدد کو روکنے کی تربیت فراہم کی گئی تاکہ اساتذہ اپنے زیر تعلیم طلباء کو اسپتالوں میں پیشہ ورانہ خدمات کے دوران پیش آنےو الے ناخوشگوار واقعات سے بآسانی و خوش اسلوبی سےنمٹنے کے قابل بنا سکیں، ٹریننگ کے دوران شرکاء کو بتایا گیا کہ تحقیق سے پتہ چلا ہے کہ 49 فیصد ہیلتھ کیئر ورکرز کو پیشہ ورانہ خدمات کی انجام دہی کےدوران کسی نہ کسی اشتعال انگیزی کا سامنا کرنا پڑتا ہے، گزشتہ 6 ماہ کےدوران ایک تہائی سے زیادہ تقریباً 38فیصد ہیلتھ کیئر ورکرزکیساتھ اشتعال انگیزی کی گئی جبکہ 33 فیصد ہیلتھ کیئر ورکرز کو نازیبا الفاظ اور دھمکیوں کا سامنا رہا۔

اس سلسلے میں جناح سندھ میڈیکل یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر امجد سراج میمن کا کہنا تھا کہ جناح سندھ میڈیکل یونیورسٹی میں طب اور صحت کے شعبے کی ضروریات کے مطابق تحقیق پر زور دیا جاتا ہے ، ماسٹر ٹرینرز ٹریننگ کا انعقاد خوش آئند ہے، اس سےحاصل کردہ معلومات کو استعمال کرتے ہوئے ہیلتھ کیئر ورکرز پیشہ ورانہ خدمات کےدوران غیر معمولی حالات سے نمٹ سکیں گے۔

اس موقع پر اپنا انسٹیٹیوٹ آف پبلک ہیلتھ کی چیئرپرسن پروفیسر لبنیٰ انصاری بیگ نےشرکاء کو موثر ٹریننگ کے عوامل اوراسکی اہمیت سے آگاہ کرتے ہوئے بتایا کہ اپنا انسٹی ٹیوٹ طبی عملے پر تشدد کے بارے میں تحقیق اور تربیتی مواد کی تیاری میں 2015 سے مصروف عمل ہے۔

ماسٹر ٹرینرز ٹریننگ 5 موڈیولز پر مشتمل تھی، پہلا موڈیول ’’تعارفی‘‘ تھا جسے پروجیکٹ کوآرڈی نیٹر لبنیٰ مظہر اللہ نے پیش کیا ، دوسرا موڈیول’’ انتشارو تشدد کو بڑھنے سے روکنے کی تربیت ‘‘ اور تیسرا’’ کمیونی کیشن پروٹوکولز ‘‘کے حوالےسےتھا جس پر پروجیکٹ منیجر ڈاکٹر اطہر حسین نےبریفنگ دی ۔ چوتھا موڈیول ’’پوسٹ ٹراما اسٹریس ڈس آرڈر ‘‘اور پانچواں موڈیول’’ رائٹس اینڈ رسپانسبلیٹیز‘‘ پر مشتمل تھا جسے لبنیٰ مظہر اللہ نے بیان کیا۔

ورکشاپ میں سندھ انسٹیٹیوٹ آف اورل ہیلتھ سائنسز سے لیکچرار ڈاکٹر عتیقہ زاہد، لیکچرار ڈاکٹر شبانہ وزیر، انسٹیٹیوٹ آف فزیو تھراپی اینڈ ری ہیبلی ٹیشن سے ڈاکٹر بریرہ منیر، ڈاکٹر ندا وحید،سائوتھ سٹی اسپتال سے نرسنگ انسٹرکٹرامیر علی،این آئی سی ایچ سے نرسنگ انسٹرکٹر ایشور داس،این آئی سی ایچ سے نرسنگ انسٹرکٹر شبانہ وزیر،چنیوٹ اسپتال سے نرسنگ انسٹرکٹر عرفان،انسٹیٹیوٹ آف نرسنگ-جےایس ایم یو سے نرسنگ انسٹرکٹر عروج آصف ، انسٹیٹیوٹ آف نرسنگ-جےایس ایم یو سے نرسنگ انسٹرکٹر سمیرا بشیر،انسٹیٹیوٹ آف میڈیکل ٹیکنیشن-جےایس ایم یو سے لیکچرارحافظ محمد شارق بابر اور کمیونٹی ڈپارٹمنٹ-جےایس ایم یو سے لیکچرار ڈاکٹر طوبیٰ عادل نےشرکت کی۔

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment