بدھ, 24 جولائی 2024


حکومت خود یوٹیوب کھولنا نہیں چاہتی، گوگل نمائندے مایوس واپس

ایمز ٹی وی (سائنس اینڈ ٹیکنالوجی) کئی ضروری اقدامات کے باوجود وفاقی وزارت انفارمیشن ٹیکنالوجی یوٹیوب کوکھولنے کے حوالے سے نوٹیفکیشن جاری نہیں کرسکی جس کے باعث گوگل اور وفاقی حکومت کے درمیان متوقع ڈیل بھی نہ ہوسکی تاہم  چند دنوں میں نوٹیفکیشن جاری کردیاجائے گا۔

 

میڈیا رپورٹس کے مطابق گوگل انتظامیہ نے پاکستان کے آئی ٹی ڈپارٹمنٹ کی درخواست پریوٹیوب پی کے کوبنانے میں کروڑوں روپے خرچ کیے ہیں  تاہم وزارت آئی ٹی کے ایک اہلکارنے نام ظاہرنہ کرنے کی شرط پربتایاکہ گوگل انتظامیہ کوحکومت کے ساتھ بغیرکوئی ڈیل ہوئے ہی واپس لوٹناپڑا۔

گوگل کے نمائندوں کے ساتھ5گھنٹے تک جاری رہنے والی گفتگوکے بعدوفاقی وزیرخزانہ اسحٰق ڈار اور وزیرآئی ٹی انوشہ رحمٰن نے یوٹیوب کوکھولنے کے حوالے سے نوٹیفکیشن جاری کرنے کی درخواست کی تھی حکومت اورگوگل یوٹیوب پی کے کوشروع کرنے پرمتفق ہوئے تھے اوراس ویب سائٹ کی لانچنگ اوریوٹیوب کو کھولنے کااقدام ایک ساتھ لیا جانا تھا تاہم گوگل کے نمائندے3روزتک انتظارکرنے کے بعدملک چھوڑکرچلے گئے ہیں۔

 

ماہرین کاخیال ہے کہ وزارت آئی ٹی کی سستی کی وجہ سے گوگل کااس معاملے سے پوری طرح نکل جانے کاخدشہ پیداہوگیاہے یاپھرمستقبل میں عدالت سے رجوع کیے جانے کی صورت میں اس پرپھرمکمل پابندی بھی لگ سکتی ہے۔

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment