بدھ, 24 جولائی 2024


گوگل پرسرچنگ کےدوران محتاط رہیں

مانیٹرنگ ڈیسک : گوگل وہ سرچ انجن ہے جس کے بغیر انٹرنیٹ ادھورا سا لگتا ہےجدید ٹیکنالوجی سے لیکرتعلیم سیاست، کھیل غرض ہر طرح کی معلومات ہم اس کے ذریعے حاصل کرتے ہیں۔خودکار گاڑیوں سے لے کر ورچوئل رئیلٹی ہیڈسیٹ اور اسمارٹ کانٹیکٹ لینسز تک گوگل کے متعدد پراجیکٹس ہیں مگر اس کی اصل پہچان سرچ انجن ہی ہے۔

سب ہی گوگل پر روزانہ کچھ نہ کچھ سرچ کرتے ہیں، تاہم کچھ چیزیں ایسی ہوتی ہیں جنہیں سرچ کرنا باعث ندامت بھی ہوسکتا ہے۔ آئیے آج ہم آپ کو اس وڈیو میں بتاتے ہیں جن چیزوں کو سرچ کرنےسے آپ کو گریز کرنا چاہئے

کسی قسم کے جرائم سے متعلق سرچ کرنا کافی سنگین ہوسکتاہےہتھیار کیسےبنایاجاتا ہے وغیرہ، چاہے بطورتفریح کے لیے ہی کیوں نہ کیا گیا ہو، مگر مختلف ممالک میں سیکیورٹی ادارے اس طرح کی سرچز کو ہمیشہ ٹریک کرتے ہیں، اور آپ کا آئی پی ایڈریس ان کے ڈیٹابیس میں جاسکتا ہے۔

اسی طرح کے مسائل سے اُس صورت میں بھی دوچار ہوسکتے ہیں کہ اگر آپ نے اسکن کےمسائل کے حوالے سے سرچ کیا ہو۔

ایسا کتنی بار ہوا ہوگا جب آپ کو انگلش کے اردو ترجمے کے لیے گوگل سے رجوع کرنا پڑا؟ ایسا کرنے کی کوشش بھی نہیں کرنی چاہئے کیونکہ گوگل سے جو ترجمہ آپ کے سامنے آئے گا وہ شرمندگی کا باعث بن سکتا ہے بلکہ ہوسکتا ہے کہ جملے کا مطلب کچھ سے کچھ ہوجائے

ہم میں سے بیشتر افراد تمباکو نوشی کے عادی ہیں اور ہوسکتا ہے کہ اکثر وہ اس عادت کے مضر اثرات کے بارے میں سوچتے بھی ہوں، انٹرنیٹ تمباکو نوشی کے عادی افراد کے بیمار پھیپھڑوں کی تصاویر سے بھرا ہوا ہے، جو کہ ہوسکتا ہے کہ آپ کو بہت زیادہ پریشان کردیں۔
حتیٰ کہ گوگل پراپنا نام بھی آپ کوسرچ کرنا مہنگا پڑسکتاہے

یہ کوئی راز نہیں کہ انٹرنیٹ کے اس عہد میں پرائیویسی نام کی کوئی چیز باقی نہیں رہ گئی اس لئے گوگل پر سرچنگ کے دوران محتاط رہیں

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment