جمعہ, 01 مارچ 2024


لال بیگ جراثیم پھیلاتا نہیں،اُنہیں ختم کرتا ہے، نئی تحقیق

ایمز ٹی وی (ہیلتھ ڈیسک) جدید تحقیق نے لال بیگ کے ڈراونے اور گھناونے تصور کو غلط ثابت کردیاہے۔ ایک ریسرچ سے پتا چلا ہے کہ یہ بدنام کیڑا جراثیم پھیلاتا نہیں، بلکہ اُنہیں ختم کرنے کی قدرتی صلاحیت رکھتا ہے،اور لال بیگ کی یہی صلاحیت اب انسانوں کے کام آنے والی ہے ۔ 

 

لال بیگ زمین پر تیزی سے رینگے یا ہوا میں اُڑے، اسے دیکھتے ہی خواتین چیخنے لگتی ہیں اور مرد بے اختیار اسے فنا کے گھاٹ اُتارنے کیلئے جھپٹ پڑتے ہیں، اس کی وجہ یہ ہے کہ گٹروں اور نالیوں سے نکلنے والے لال بیگ کو خطرناک جراثیم اور جان لیوا بیماریاں پھیلانے والا کیڑا سمجھا جاتا ہے ،لیکن اب لال بیگوں سے گھبرانے کی کوئی ضرورت نہیں کیونکہ آنیوالے چند سالوں میں یہ کئی بیماریوں کا علاج کرنے میں مددگار ثابت ہوسکتے ہیں اور ممکن ہے، آپ کو بعض ایسی دوائیں پینی پڑیں جو لال بیگ سے حاصل کئے گئے اینٹی بیکٹیریل مالیکیول سے تیار کی گئی ۔

 

20 سال سے برطانیہ اور امریکا میں تحقیق کرنیوالے ڈاکٹر نوید احمد خان کا کہنا ہے کہ کیمیکل کی تیاری کے بعد اس تحقیق کو دیگر جانوروں اور پھر انسانوں پر بھی آزمایا جائیگا، اس دوا کو مارکیٹ میں آئندہ 5سے 7برس میں متعارف کرایا جائیگا۔ کامیاب تحقیق کے بعد طبی ماہرین کا کہنا ہے کہ موجودہ صورتحال میں موثر اینٹی بائیو ٹکس کی ضرورت ہے۔ اس کیلئے ان جانداروں پر کام کیا جاسکتا ہے جن کا مدافعاتی نظام فطری طور پر مظبوط ہو۔

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment

comment1

  • Comment Link Justmn

    Justmn

    27/12/2017

    Cytotec For Sale Buy Authenic Cipro On Line http://costofcial.com - cialis Sildenafil Sans Prescription Viagra Pillole Amoxicillin For Uti Bombay Ed Pills cialis buy online Viagra Kamagra 100 Efectos Cialis 10 Mg Cialis Turchia Buy Vigora 50 http://costofcial.com - cialis Priligy Dapoxetin Schweiz Generique Baclofen En Canada Finasteride Secure Ordering Overseas