جمعہ, 07 مئی 2021


اس وقت سندھ میں کوئی مخصوص ضلع متاثرنہیں ہے،وزیرتعلیم سندھ

کراچی: وزیر تعلیم سعید غنی کاکہنا ہے کہ ۔اس وقت سندھ میں کوئی مخصوص ضلع متاثر نہیں ہےسندھ کے تعلیمی اداروں میں مثبت کیسز کی شرح2.6فیصد ہے۔

کورونا وباء کی تیسری لہر کے باعث تعلیمی اداروں میں تدریسی عمل سے متعلق نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی) کےاجلاس کے بعد وزیر تعلیم سعید غنی نے بیان جاری کرتے ہوئے کہا ہےکہ محکمہ تعلیم سندھ نے پہلے ہی اعلان کردیا تھا کہ یکم سے آٹھویں جماعت تک میں عملی طور پر تدریسی عمل معطل کر دیا گیا ہے۔

22 اپریل سے سندھ بھر میں عملی طور پر تعلیمی عمل بحال ہوگااگر خدانخواستہ صوبے کے کسی اضلاع میں کوروناوائرس کے کیسز میں اضافہ ہوتا ہے تو وہاں کی ضلعی انتظامیہ اس اضلاع کے حوالے سے فیصلہ کرسکتی ہے۔

وزیر تعلیم کا کہنا ہے کہ الحمدللہ اس وقت صوبے میں کورونا وائرس کی صورتحال کنٹرول میں ہے۔اس وقت سندھ میں کوئی مخصوص ضلع متاثر نہیں ہےسندھ کے تعلیمی اداروں میں مثبت کیسز کی شرح6.2فیصد ہے۔

بورڈ کے امتحانات کے حوالےسے انہوں نے بتایاکہ نویں سے بارہویں جماعت تک کا تعلیمی عمل بلا تعطل جاری رہے گا

نویں جماعت سے بارہویں جماعت کے امتحانات شیڈول کے مطابق ہونگےبغیر امتحانات کے کسی کو پروموٹ نہیں کیا جائے گا۔

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment