ھفتہ, 15 مئی 2021
×

Warning

JUser: :_load: Unable to load user with ID: 46

Displaying items by tag: sleep

ایمزٹی وی(صحت)یہ بات جرمنی میں ہونےوالی ایک طبی تحقیق میں سامنے آئی۔ ایسسین یونیورسٹی ہاسپٹل کی تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ بے خوابی اور حد سے زیادہ سونا دماغ تک جانے والی خون کی فراہمی کو روکنے کا باعث بن سکتا ہے۔ تحقیق کے مطابق بہت کم یا زیادہ نیند کی صورت میں فالج کا دورہ پڑنے سے صحت یابی کا امکان بہت کم ہوجاتا ہے۔

محققین کا کہنا تھا کہ نتائج سے معلوم ہوتا ہے کہ نیند کے معمولات میں تبدیلی منفی اثرات کا باعث بنتی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ نیند کے مسائل عام طور پر دو وجوہات کی بناءپر ہوتے ہیں ایک دوران نیند نظام تنفس کا متاثر ہونا (خراٹے) اور دوسرا بے خوابی یا نیند نہ آنا۔

تحقیق کے مطابق ایسے شواہد ملے ہیں جن کے مطابق نیند کے دوران نظام تنفس کے مسائل فالج کا خطرہ بڑھا دیتے ہیں جبکہ بے خوابی بھی اس جان لیوا مرض کا باعث بننے کے ساتھ ساتھ اس سے ریکوری کے امکانات بھی کم کرتی ہے۔

یہ تحقیق طبی جریدے جرنل نیورولوجی میں شائع ہوئی۔ قبل ازیں ٹیکساس اے اینڈ ایم ہیلتھ سائنس سینٹر کالج آف میڈیسین کی ایک تحقیق کے مطابق ملازمت کے کوئی مخصوص اوقات نہ ہونا لوگوں میں جان لیوا فالج کا خطرہ بڑھاتے ہیں۔

اس سے پہلے یہ بات پہلے ہی سامنے آچکی ہے کہ مختلف شفٹوں میں کام کرنے والے افراد میں دل کے دورے اور موٹاپے جیسے امراض کا بھی بہت زیادہ خطرہ ہوتا ہے مگر پہلی بار یہ شواہد سامنے آئے ہیں کہ یہ دماغی انجری کا بھی باعث بن سکتا ہے۔

تحقیق کے مطابق انسانی جسم دن اور رات کے معمولات کا عادی ہوتا ہے جس کو ایک اندرونی گھڑی کنٹرول کرتے ہوئے بتاتی ہے کہ کب سونا، کب جاگنا، کھانا اور دیگر کام کرنے ہیں۔ تاہم جب کوئی شخص کبھی دن، کبھی رات میں کام کرتا ہے تو اس کی جسمانی گھڑی نیند اور کھانے کے معمولات میں غیرمعمولی تبدیلی سے الجھن کا شکار ہوجاتی ہے اور مختلف امراض کا خطرہ بڑھ جاتا ہے۔

جمعرات, 04 اگست 2016 13:12

بے خوابی سے بچنے کے 6 عام طریقے

ایمزٹی وی(صحت)آج کے دور کی مصروفیات نے نیند کا اوسط دورانیہ 6 گھنٹوں تک پہنچا دیا ہے (طبی ماہرین 7 سے 8 گھنٹے تک سونے کا مشورہ دیتے ہیں لگ بھگ ہر ایک کو اچھی نیند کی اہمیت کے بارے میں علم ہے مگر اکثر ایسا ہوتا ہے کہ سونے کی کوشش کرتے ہیں مگر نیند آنکھوں سے دور بھاگ جاتی ہے۔ اگر آپ رات کی اچھی نیند چاہتے ہیں تو ان آسان طریقوں کو آزما کر دیکھیں اور بغیر ادویات کے بے خوابی کے عارضے سے نجات پائیں۔

گرم دودھ اور شہد کا استعمال رات کو سونے سے قبل ایک گلاس شہد ملا گرم دودھ بہترین نیند لانے کا زبردست گھریلو ٹوٹکا ہے۔ دودھ میں ایک امینو ایسڈ ٹرائیپٹوفان موجود ہوتا ہے جو ایک ہارمون سیروٹونین کی مقدار بڑھاتا ہے جو دماغ کو نیند کے سگنلز بھیجتا ہے۔ کاربوہائیڈیٹس جیسے شہد اس ہارمون کو تیزی سے دماغ میں پہنچاتے ہیں۔

نیند دوست ماحول بنانا جو لوگ بے کوابی کے شکار ہو ان کے لیے پرسکون اور نیند والا ماحول بہتر ثابت ہوتا ہے، اس کے لیے موبائل فون اور لیپ ٹاپ سمیت تمام تر ڈیوائسز کو کمرے سے باہر یا کم از کم بستر سے دور رکھ دیں، کیونکہ ان پر آنے والے نوٹیفکیشن نیند میں مداخلت کا باعث بنتے ہیں۔

ورزش کو آزمائیں اگر کسی قسم کی بے چینی رات کو جگائے رکھتی ہے تو یوگا، مراقبہ یا ڈائری لکھنے کی کوشش کریں، تائی چی بھی ذہنی تناﺅ میں کمی لان والی طاقتور ورزش ہے، ایک تحقیق کے مطابق اس ورزش کی عادت لوگوں کو جلد سلانے میں مددگار ثابت ہوتی ہے۔

سونے کا وقت طے کرلیں اگر آپ اکثر رات کو جاگتے رہتے ہیں تو آپ کے آسان ترین گھریلو نسخہ وقت طے کرلینا ہے، یعنی روزانہ ایک ہی وقت پر بستر پر جانے اور صبح اٹھنے کو ترجیح بنالیں، اسی طرح سونے سے قبل مطالعہ یا موسیقی سننا بھی دماغ کو سکون پہنچا کر نیند کے لیے تیار کرتا ہے۔

نیم گرم پانی سے نہانا ویسے یہ طریقہ گرمیوں میں تو کارآمد نہیں تاہم سردیوں میں سونے سے ڈیڑھ سے دو گھنٹے پہلے گرم پانی سے نہانے کی عادت اچھی نیند کے لیے فائدہ مند ثابت ہوتی ہے۔

ادویات کو دیکھیں متعد ادویات نیند پر اثرانداز ہوکر بے خوابی کا باعث بنتی ہیں، اگر آپ کسی مرض کے شکار ہیں اور نیند کا مسئلہ درپیش ہے تو اپنے ڈاکٹر سے بات کرکے ادویات یا ان کی مقدار میں تبدیلی کا مشورہ لیں۔

ایمز ٹی وی(صحت)نیویارک کے امریکی طبی ماہرین رات کو سونے سے پہلے کھانا کھانے کے نقصانات پہلے ہی بہت ذیادہ گنواتے رہتے ہیں،اور اب ایک نئی تحقیق نے ثابت کر دیا ہے کہ کمر کو پھیلانے کے ساتھ ساتھ انسانی دماغ کو بھی نقصان پہنچا تاہے لاس اینجلس کی یونیورسٹی آف کیلیفورنیا سے وابستہ تحقیق دان کی ٹیم نے چوہوں پر کھانے کے مختلف اوقات کے اثرات کا گہرائی سے مشاہدہ کیا۔سائنسدانوں پر دوران مشاہدہ انکشاف ہوا کہ چوہوں کے دو مختلف گروپوں پر مختلف وقتوں میں دیئے جانے والے اثرات مختلف ظاہر ہوئے تھے۔ رات کے وقت میں کھانا کھانے والے چوہوں کاوزن میں اضافہ ہوا اور سب سے بڑھ کر ان کے دماغ پر بھی اس کے منفی اثرات مرتب ہوئے ، سائنسدانوں کے مطابق انہوں نے اسں بات کا ثبوت حاصل کر لیاہے کہ کھانے کے وقتوں میں تبدیلی انسان کے سیکھنے اور یادداشت کے عمل پر منفی اثرات ڈالتی ہے اور رات کے کھانا کھانے سے دماغ کار کردگی متاثر ہوتی ہے۔

بدھ, 25 نومبر 2015 12:09

نیند یاداشت کو بہتر بنائے۔

ایمز(صحت)آٹھ گھنٹے کی نیند صحت اور شخصیت کے لئے ضروری ہوتی ہے مگر طبی محققین اس کے ایک اور فائدے کو سامنے لائے ہیں۔امریکا میں ہونے والی تحقیق میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ جو لوگ رات کو آٹھ گھنٹے کی نیند لیتے ہیں ان کی یاد داشت دیگر افراد کے مقابلے میں نمایاں حد تک بہتر ہوتی ہے۔برگھم اینڈ ویمن ہاسپٹل کی اس تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ نیند کے دوران کئی طرح کی یاداشتیں بہتر ہوتی ہیں مگر ہماری تحقیق میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ اس عادت کو اپنانے سے نئے چہرو ں اور ناموں کو یاد رکھنے کی صلاحیت بھی بہتر ہوجاتی ہے۔تحقیق کے دوران جب رضاکاروں کو مکمل نیند کا موقع دیا گیا تو ان کے اندر چہرے کے ساتھ نام کو شناخت کرنے کی صلاحیت بھی بڑھ گئی اور وہ اعتماد سے جواب دینے لگے۔ محققین کے مطابق نئی چیزوں کو سیکھنے کے بعد سونا یاداشت کو بہتر بناتا ہے۔اس تحقیق کے دوران نوجوان رضاکاروں کی مدد لی گئی تاہم تحقیق ٹیم کا کہنا ہے کہ اس کا اطلاق ہر عمر کے افراد پر ہوتا ہے۔محققین کا کہنا ہے کہ نئی معلومات کو سیکھنے کے لئے نیند بہت اہم ہے اور عمر بڑھنے کے ساتھ نیند کا دورانیہ متاثر ہونے سے لوگوں کو یاداشت کے مسائل کا سامنا ہوتا ہے۔یہ تحقیق طبی جریدے جرنل نیورولوجی آف لرننگ اینڈ میموری میں شائع ہوگی۔

ایمزٹی وی(چارسدہ)نوجوانوں میں ہیروئن کے استعمال کے بعد "آئس" کے استعمال میں تیزی سے اضافہ ہورہاہے۔ ذرائع کے مطابق "آئس‘‘ افغانستان میں امریکا اور نیٹو فورسزجنگی حکمت عملی کے تحت استعمال کرتی رہی ہیں۔ ’آئس‘‘ کے استعمال سے انسان میں 3 دن تک جنگجو صلاحیتیں اورغیر معمولی قوت پیدا ہوتی ہیں جب کہ 3 دن تک کھانے پینے اورنیند کی ضرورت بھی پیش نہیں آتی۔تفصیلات کے مطابق چارسدہ کے مختلف علاقوں میں نوجوان نسل مضر صحت ’’آئس‘ کا استعمال بہت تیزی سے کررہے ہیں جو کہ نہ صرف جنگی جنونیت بڑھانے، بھوک، پیاس اور نیند ختم کرنے کے لیے استعمال کیاجاتا ہے ۔آئس پاؤڈر جیسے مضر صحت ڈرگ انتہائی مہنگی ہے جس کے حصول کے لئے نوجوانوں میں اسٹریٹ کرائم کا اضافہ ہورہا ہے۔چارسدہ پولیس اوردیگر ذمہ دار اداروں نے آئس پاؤڈر کے روک تھام کے لئے مثبت اقدامات نہ کئے تواسٹریٹ کرائم، چوری، ڈکیتی کی وارداتوں سمیت دیگرمعاشرتی برائیوں میں خطرناک حد تک اضافہ ہوسکتا ہے۔

ایمز ٹی وی (مانٹرنگ ڈیسک )خواب آور ادویات استعمال کرنے والے لوگوں کے لیے ماہرین نے ایک آسان حل پیش کردیا ،بر طانیہ آکسفورڈیو نیورسٹی کے ماہرین نے ایک تحقیق میں یہ دلچسپ انکشاف کیا ہے کہ رات کو اندھیرے میں دانت برش کرکے سونے سے پر سکون اور میٹھی نیند آتی ہے ۔ماہرین کا کہنا ہے کہ سونے سے قبل دانتوں کو با تھ روم کی سفید روشنی میں برش کرنے سے یہ مصنوئی روشنی عین ا س وقت ہمیں جگانہ شروع کردیتی ہے جب سونے کے لیے بستر پر لیٹ رہے ہوتے ہیں ،اس لیے اگر دانتوں کو برش باتھ روم کی روشنی بند کرکے کیا جائے تو اس عمل سے بہتر نیند آسکتی ہے ،

Page 2 of 2