جمعہ, 04 دسمبر 2020

 

ایمز ٹی وی (صحت) برطانوی شہریوں کی کھانے کی عادات سے متعلق ایک تحقیقی رپورٹ میں کہا گیا ہےکہ نصف برطانوی شہری ناشتہ نہیں کرتے، ایک تہائی کہتی ہے ناشتے کیلئے وقت ہی نہیں ہوتا۔ 25 ملین برطانوی شہری روزانہ کا ناشتہ چھوڑ رہے ہیں، 2012سے اب تک ناشتہ چھوڑنے کی عادت میں ایک 120 فیصد اضافے کا ذمہ دار مصروف زندگی، کام کے دباؤ، بے چینی اور وقت کی کمی کو ٹھہرایا گیا ہے۔ ناشتہ چھوڑنے کا رجحان زیادہ تر 16 تا 24 سال کے نوجوانوں میں ہے۔ رپورٹ کے مطابق صحت بخش ناشتے جیسے دلیہ، فائبر اور پروٹین سے دن اچھا گزارا جا سکتا ہے۔

 

 

ایمز ٹی وی(تعلیم/کراچی) وفاقی اردو یونیورسٹی کے رجسٹرار ڈاکٹر محمد صارم کے مطابق تعلیمی سال جولائی2016(شام)کے تمام شعبہ جات( گلشن اقبال و عبدالحق کیمپسز)کے طلباء و طالبات انرولمنٹ فارم 10فروری 2017تک عسکری بینک یونیورسٹی روڈ برانچ اور عبدالحق کیمپس اور عسکری بینک بوہرہ پیر برانچ میں جمع کرائے جاسکتے ہیں۔یہ فارم جامعہ اردو کی ویب سائٹ آن لائن پُرکئے جاسکتےہیں۔انرولمنٹ فیس 2100 روپے بذریعہ آن لائن وائوچر متعلقہ برانچ میں جمع کرائیں۔فارم کے ساتھ میٹرک سندکی نقل، شناختی کارڈکی کاپی، تین عدد تصاویر ،اصل مائیگریشن سرٹیفکیٹ، اصل وائوچر اوراصل انٹرمیڈیٹ مارکس شیٹ(بی ایس کیلئے)اور گریجویشن مارکس شیٹ(ایم ایس سی کیلئے ) منسلک کریں۔

 

 

ایمز ٹی وی (اسپورٹس) قومی ایک روزہ ٹیم کے نائب کپتان سرفراز احمد والدہ کی علالت کے سبب آسٹریلیا کے خلاف سیریز کے بقیہ تین میچوں سے بھی دستبردار ہو گئے ہیں۔سرفراز احمد کی والدہ شدید علیل ہیں جس کے سبب وہ ٹیسٹ سیریز کے اختتام پر وطن واپس لوٹ گئے تھے اور ایک روزہ میچوں کی سیریز کے ابتدائی دو میچوں میں شرکت نہ کرنے کا اعلان کیا تھا۔اس موقع پر امید تھی کہ شاید وہ آخری تین میچوں کیلئے ٹیم کو دستیاب ہو سکیں لیکن والدہ کی علالت کے سبب سیریز سے دستبردار ہونے اور آسٹریلیا واپس نہ جانے کا فیصلہ کیا ہے۔قومی ٹیم کے نائب کپتان نے سریز سے دستبرداری کے فیصلے سے بورڈ کو بھی آگاہ کردیا ہے۔سرفراز کی غیر موجودگی میں محمد رضوان وکٹ کیپر کے فرائض انجام دیں گے جنہوں نے ابتدائی میچوں میں احسن طریقے سے یہ ذمے داری انجام دی۔ واضح رہے کہ قومی ون ڈے ٹیم کے کپتان اظہر علی پہلے ایک روزہ میچ میں انجری کا شکار ہو گئے تھے اور ان کی جگہ دوسرے ون ڈے میں حفیظ نے قیادت کر کے گرین شرٹس کو فتح سے ہمکنار کرا کے سیریز 1 - 1 سے برابر کردی تھی اور پرتھ میں جمعرات کو ہونے والے تیسرے ون ڈے میں بھی حفیظ ہی قیادت کریں گے۔

 

 

ایمز ٹی وی(تعلیم/کراچی) جامعہ کراچی کے فارغ التحصیل طلبہ کی تنظیم یونی کیرئینزانٹر نیشنل نے18 جنوری کویوم جامعہ کراچی شایان شان انداز اور شاندار طریقے سے منانے کا فیصلہ کیا ہے۔ ان خیالات کا اظہار صدر یونی کیرئینزانٹر نیشنل پروفیسر اعجاز احمد فاروقی نے مقامی ہوٹل میں ایگز یکیٹوکمیٹی کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔ اجلاس میں کہا گیا کہ جامعہ کراچی کی ترقی ہم سب کی ترقی ہے اور اسکی ترقی کیلئے ہم سے جو کچھ ہوسکے گا وہ ہم ضرور کریں گے انھوں نے کہا کہ جامعہ کراچی اس ملک کی عظیم ترین درسگاہ اور طلبہ کی مادرعلمی ہے۔ جس سے لاکھوں تشنگان علم ودانش اپنی اپنی علمی پیاس کی سیرابی کرتے رہے اور کرتے رہیں گے۔ اجلاس میں اراکین سے گزشتہ اجلاس کےمنٹس کی منظوری لی گئی یونی کیرئینز کے صدرپروفیسراعجاز احمدفاروقی نے جب اراکین سے یوم جامعہ کراچی کو شایان شان اور شاندار طریقے سے منانے کے حوالے سے رائے طلب کی تو سب نے متفقہ طور پر اس سے اتفاق کیا اور اسے مؤثر انداز میں منانے کیلئے اقدامات کرنے کا مشورہ دیا۔ اس موقع پر بتایا گیا کہ شیخ الجامعہ ڈاکٹر محمد قیصر، کراچی یونیورسٹی ٹیچرز ایسوسی ایشن اور جامعہ کراچی سے وابستہ مشہور ومعروف شخصیات سے رابطے شروع کر دئے گے۔ نیز جامعہ کراچی کے ممتاز فارغ التحصیل طلبہ سے کہا گیا کہ کہ وہ18 جنوری صبح 10:30 بجے سلور جوبلی گیٹ پر پہنچ کر جامعہ کراچی سے محبت کا اظہار کریں۔

 

 

ایمز ٹی وی (اسپورٹس) پاکستان کوآسٹریلیا کیخلاف پہلے ون ڈے میں شکست ہوئی تاہم گرین شرٹس نے باؤنس بیک کرتے ہوئے محمد حفیظ کی قیادت میں کینگروز کو دوسرے میچ میں 6وکٹوں سے مات دیکر سیریز1-1سے برابرکر دی۔ کینگروز کیخلاف تیسرے معرکہ کیلئے قومی ٹیم نے پرتھ میں ڈیرے ڈال لئے، کھلاڑی ایک روز آرام کے بعد منگل سے ٹریننگ کا آغاز کریں گے۔ ریگولر کپتان اظہر علی کی ہیمسٹرنگ انجری کے باعث تیسرے میچ میں شرکت بھی مشکوک ہے ،تیسرے ون ڈے کیلئے وننگ کمبی نیشن برقرار رکھے جانیکا امکان ہے۔پاکستانی ٹیم پیر کو چار گھنٹے سے زائد کی فلائٹ سے پرتھ پہنچی۔ٹیم منیجر وسیم باری نے کہا کہ منگل کی صبح 9 بجے پریکٹس سیشن سے کھلاڑی پرتھ کی کنڈیشنز سے ہم آہنگ ہونے کی کوشش کریں گے، دوسرے ون ڈے میں کامیابی نے مورال بلند کر دیا اور اب سیریز اپنے نام کرنے کیلیے پْرعزم ہیں۔ انھوں نے کہا کہ تازہ دم ون ڈے اسپیشلسٹ کھلاڑیوں کے آنے سے ٹیم مزید مضبوط ہو گئی اور سب کی نگاہیں تاریخ رقم کرنے پر ہیں، ایک سوال پر انھوں نے کہا کہ کپتان اظہر علی کی حالت میں بہتری تاہم وہ تاحال ہیمسٹرنگ انجری سے مکمل نجات حاصل نہیں کر سکے ہیں، ان کی ری ہیبلی ٹیشن کا کام جاری ہے، تیسرے ون ڈے میں تو وہ حصہ نہیں لے سکتے البتہ آخری دونوں میچز کیلیے واپسی کا امکان ہے۔ پاکستان اورآسٹریلیا کے درمیان تیسرا میچ جمعرات کو واکا گراؤنڈ پر کھیلا جائیگا۔ پاکستان ٹیم پرتھ میں 18 میچزکھیل چکی ہے جس میں سے اس نے9میں فتح سمیٹی جبکہ اتنے ہی میچزمیں شکست کا سامنا کرناپڑا۔ پاکستان کیلئے اچھی خبر ہے کہ میچ کیلئے کینگروز کو تین اہم کھلاڑی دستیاب نہیں ہوں گے۔ ابتدائی دومیچوں میں ٹیم کا حصہ رہنے والے آل راؤنڈر مچل مارش زخمی ہوکر سیریز سے باہر ہوگئے ہیں۔آسٹریلیا کے کرکٹ بورڈ کا کہنا ہے کہ کندھے کی انجری کا شکار مچل مارش پاکستان کے خلاف سیریز کے دیگر میچوں میں ٹیم کا حصہ نہیں ہوں گے جبکہ انھیں بھارت کے دورے کے لیے اعلان کردہ 16 رکنی ٹیم میں بھی شامل کیا گیا ہے۔ مچل مارش، میلبرن میں پاکستان کے خلاف سیریز کے دوسرے میچ میں کندھے میں درد کے باعث بولنگ نہیں کرسکے تھے۔ بورڈ کے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ مکمل فٹنس کے ساتھ واپسی کے لیے انھیں بحالی اور آرام کے لیے کچھ وقت درکار ہے۔ آسٹریلیا نے مارش کے متبادل کے طور پر کسی کھلاڑی کو شامل نہیں کیا ہے تاہم برسبین میں زخمی ہونے والے کرس لین کی جگہ پیٹر ہینڈز کومب کو ٹیم کا حصہ بنایا گیا ہے۔ کرس لین کی آخری دومیچوں میں شرکت بھی واضح نہیں ہے جبکہ پرتھ میں ہونے والے تیسرے میچ کے لیے فاسٹ بولر مچل اسٹارک کو بھی آرام کا موقع دیا گیا ہے۔ آسٹریلیا کے چیف سلیکٹر ٹریوس ہونز کا کہنا ہے کہ مچل اسٹارک نے مصروف چھ مہینے گزارے ہیں اور بہت کرکٹ کھیلی ہے۔ ہمیں اس بات کا خیال رکھنا ہے کہ انھیں آرام کرنے کا موقع ملے اور آئندہ مہینوں میں ان کے شیڈول کو دیکھتے ہوئے ہم سمجھتے ہیں کہ ان کو آرام دینے کا یہی بہتر موقع ہے۔ نوجوان بیٹسمین کرس لن گردن میں تکلیف کے باعث پرتھ میں تیسرا ایک روزہ میچ نہیں کھیلیں گے۔ کندھے کی تکلیف میں مبتلا آ ل راؤنڈرمچل مارش کے متعلق فزیو تھیراپسٹ ڈیوڈ بیکلی نے بتایا کہ مچل مارش کے کندھے کی تکلیف میں اضافہ ہوگیا ہے اس لیے انہیں مکمل فٹنس حاصل کرنے کے لئے مکمل آرام اورعلاج کی ضرورت ہے۔ مارش پاکستان کے خلاف مزید تین ایک روزہ میچز میں حصہ نہیں لیں گے تاہم ان کا نام آئندہ ماہ ہونے والے دورہ بھارت کیلئے 16 رکنی اسکواڈ میں شامل ہے۔ مچل مارش کے متبادل کے طور پر مارکس اسٹوئنز کا نام شامل کیا گیا ہے۔

 

 

ایمز ٹی وی (کراچی) ضلعی انتظامیہ کی عدم دلچسپی اورعلاقہ پولیس کی مبینہ سرپرستی میں شادی کی تقریبات میں رات12 بجے تک کی پابندی پر عملدر آمد کی بدستور خلاف ورزی جاری ہے۔ شادی کی تقریبات رات ایک بجے سے زائد وقت تک جاری رہنے کی وجہ سے ان علاقوں میں نہ صرف بدترین ٹریفک جام رہنے لگا بلکہ لوٹ مار کی وارداتوں میں بھی اضافہ ہوتا جا رہا ہے ، تفصیلات کے مطابق ضلعی انتظامیہ کی عدم دلچسپی اور علاقہ پولیس کی مبینہ سرپرستی میں شادی کی تقریبات میں رات12 بجے تک کی پابندی پر بدستور خلاف ورزی جاری ہے۔ شہر کے مختلف اضلاع جس میں ضلع وسطی ، ضلع شرقی ، ضلع غربی اور ضلع کورنگی میں واقع شادی ہالز میں شادی کی تقریبات رات 12 بجے کے بجائے ایک بجے سے زائد دیر تک جاری رہنے سے ان علاقوں میں رات گئے تک بدترین ٹریفک جام رہنا معمول بن گیا ہے۔ ضلع وسطی کے مختلف علاقوں نارتھ ناظم آباد ، سخی حسن ، گلبرگ ، انچولی ، شارع پاکستان اور ناظم آباد میں قائم شادی ہالز میں متعلقہ ڈپٹی کمشنر اور اسسٹنٹ کمشنر کی عدم دلچسپی اور علاقہ پولیس کی مبینہ سرپرستی میں شادی بیاہ کی تقریبات رات ایک بجے سے بھی زائد وقت تک جاری رہتی ہیں اور ان علاقوں میں جہاں پر شادی ہال ہیں وہاں پر شہریوں کو بدترین ٹریفک جام کی صورتحال سے دوچار ہونا پڑتا ہے۔ ضلع وسطی کے علاقے نارتھ ناظم آباد فائیو اسٹار چورنگی سے سخی حسن جانے اور آنے والی شارع پر شادی کی تقریبات دیر تک جاری رہنے کی وجہ سے ٹریفک کی روانی شدید متاثر رہتی ہے اسی طرح سے راشد منہاس روڈ یو بی ایل اسپورٹس کمپلیکس سے گلشن اقبال نیپا چورنگی جانے والی شارع پر گاڑیوں کی بے ہنگم پارکنگ اور رات دیر تک شادی کی تقریبات جاری رہنے کی وجہ سے ٹریفک جام رہنا معمول بن گیا ہے جبکہ کورنگی کراسنگ ، شاہ فیصل کالونی ، بہادر آباد ، عزیز بھٹی ، اورنگی ٹاؤن ، صفورہ ، سچل اور گلستان جوہر سمیت دیگر علاقوں میں ڈپٹی کمشنرز اور اسسٹنٹ کمشنرز کی عدم دلچسپی کے باعث شادی کی تقریبات میں رات بارہ بجے تک کی پابندی پر عملدر آمد کو یقینی نہیں بنایا جا سکا جبکہ علاقہ پولیس کی مبینہ رشوت وصولی کے بعد ہال انتظامیہ کی جانب سے منتظمین پر تقریب جلدی ختم کرنے کے لیے کوئی دباؤ نہیں ڈالا جاتا ، ذرائع کا کہنا ہے کہ رات بارہ بجتے ہی علاقہ پولیس شادی ہالوں پر پہنچ جاتی ہے تاہم ہال انتظامیہ اور تقریب کے منتظیمن کے درمیان معاملات طے ہونے کے بعد پولیس وہاں سے چلی جاتی ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ علاقہ پولیس کی جانب سے رات دیر تک تقریبات جاری رکھنے کے لیے مبینہ طور پر 1500 سے 2000 ہزار روپے تک فی شادی ہال وصول کیے جاتے ہیں جبکہ ڈیوٹی پر تعینات اہلکار کھانا کھاتے اور تھیلیوں میں بھی لیجاتے ہیں ،رات 12بجنے اور پولیس کے آنے پر ہال انتظامیہ کی جانب سے باہر کی لائٹیں تو بند کر دی جاتی ہیں تاہم رات گئے تک تقریبات جاری رہتی ہیں ، رات دیر سے شادی ہالز سے نکلنے والوں کو اسٹریٹ کرمنلز کا بھی سامنا کرنا پڑتا ہے اور اس وجہ سے ان علاقوں میں اسٹریٹ کرائمز کی وارداتیں بھی عام ہوگئی ہیں۔

 

 

ایمز ٹی وی (صحت)شہر میں تین روزہ انسداد پولیو مہم پیر کو اپنے پہلے روز جاری رہی، تاہم سہراب گوٹھ پر مقیم آئی ڈی پیز نے اپنے بچوں کو پولیو سے بچاؤ کی حفاظتی خوراک پلانے سے انکار کیا ہے۔ پیر کو مہم جاری رہی مہم کے دوران 188یونین کونسلوں کے 22لاکھ بچوں کو پولیو کی حفاظتی خوراک پلانے کا ہدف مقرر کیا گیا ہے۔ مہم کا افتتاح کمشنر کراچی نے کیا اور ضلعی انتظامیہ کو ہدایت دی کہ اپنے اپنے اضلاع میں پولیو مہم کو کامیاب بنانے کے لیے ہر ممکن اقدامات کریں تاہم کراچی میں پیر کو سراب گوٹھ پر واقع مقیم آئی ڈی پیز نے اپنے بچوں کو پولیو کی حفاظتی خوراک پلانے سے انکار کیا اس آبادی میں5800 جھونپڑیاں موجود ہیں۔ اس کچی آبادی میں 900 سے زائد 5 سال سے کم عمر کے بچے موجود ہیں. ان آئی ڈی پیز نے احتجاجاً اپنے بچوں کو پولیو کی خوراک پلانے سے انکار کیا ان کا کہنا تھا کہ ہماری کچی آبادی میں بچوں کے لیے کوئی اسکول قائم نہیں نہ ہی پینے کا پانی ہے لہذٰا اسکول نہ ہونے کی وجہ سے ان افراد نے اپنے بچوں کو پولیو کے قطرے پلانے سے انکار کر دیا۔ دریں اثناء کمشنر کراچی اعجاز احمد خان نے کہا ہے کہ انسداد پولیو کے لئے سنجیدہ کوششیں کی جارہی ہیں تمام متعلقہ ادارے پولیو کے خاتمہ کی جدوجہد میں مل کر کوششیں کر رہے ہیں۔ امید ہے پاکستان کو پولیو سے پاک ملک بنانے کی حکومت کی کوششیں جلد کامیاب ہوں گی۔ کمشنر کراچی نے تمام ڈپٹی کمشنرز کو ہدایت کی ہے کہ وہ پولیو کے خاتمہ تک اپنی کوششیں کو جاری رکھیں۔ پیر کو کمشنر کراچی اعجاز احمد خان کی ہدایت پر ڈپٹی کمشنر شرقی آصف جان صدیقی نے جنت گل اسپتال، جنت گل کالونی سہراب گوٹھ پر سال کی پہلی مہم کا افتتاح کیا۔ اس موقع پرخطاب کر تے ہوئے آصف جان صدیقی نے کہا کہ کمشنر کراچی کی قیادت میں ضلعی انتظامیہ کراچی سے پولیو کے خاتمہ کے لئے بھر پور کوششیں کر رہی ہے۔ انھوں نے کہا کہ مہم چھ روز جاری رہے گی۔کراچی کی تمام 188 یونین کونسلوں میں مہم پر عملدر آمد کیا جا ئے گا۔ مہم میں 22 لاکھ سے زائد بچوں کو پولیو کے قطرے پلائے جائیں گے۔ مہم میں 12ہزار سے زائد پولیو ٹیمیں فرائض انجام دیں گی۔ انھوں نے کہا کہ کمشنر کراچی کی ہدایت پر تمام ڈپٹی کمشنرز نے ڈسٹرکٹ پولیو کنٹرول روم کو فعال بنادیا ہے جس سے مانٹیرنگ موثر ثابت ہوئی۔ ڈپٹی کمشنر شرقی آصف جان صدیقی نے کہا کہ یونین کونسل نمبر چار گجرو حساس یونین کونسل میں شامل ہے۔ اس علاقہ میں انسداد پولیو کی کامیاب کوششیں حوصلہ افزا بات ہے۔ اس موقع پر کمشنر کراچی پولیو ٹاسک فورس کے کو آڑڈینیٹر ڈاکٹر نصرت علی، اسٹنٹ کمشنر آغا سراج، محکمہ صحت کے افسران، عالمی ادارہ صحت، یونیسف کے نمائندے اور پولیس کے افسران بھی موجود تھے۔

 

 

ایمز ٹی وی(تعلیم/گوادر) آ فاق اور پر ائیوٹ اسکول ایسوسی ایشن گوادر کے زیراہتمام گورنمنٹ ماڈل ہائی اسکول میں جاری دور و زہ تعلیمی فیسٹو ل کا اختتام ہوگیا ۔ فیسٹول کے دوران طالب علموں کے درمیان کوئز، پنیٹنگ اور سائنسی آلات کی نمائش کے مقابلے کرائے گئے اور مختلف اشیاء کے اسٹال بھی لگائے گئے تھے ۔ اختتامی تقر یب سے خطاب کر تے ہوئے مقر رین نے کہا کہ آ فاق طالب علموں کے صلا حتیتوں کا نکھار نے کے لےئے اس قسم کے پروگرام کو ہمیشہ سے تسلسل دے رہی ہے جس کا مقصد نہ صرف بہتر تعلیمی ما حول کا قیام ہے بلکہ اس کی توسط سے طالب علموں کو تعلیم کی نئی جہتوں سے بھی ہمکنار کرانا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ صدی علم و آگہی کی صدی ہے تعلیم کو کلیدی اہمیت حاصل ہے تعلیم سے قوموں کی ترقی وابستہ ہے اور جن اقوام نے آج جو ہمہ گیر ترقی حاصل کی ہے وہ تعلیم کی مرہون منت ہے ۔ انہوں نے کہا کہ یہ بچے ہمارے مستقبل کے سر مایہ ہیں اور آ گے چل کر ان میں سے کوئی ہما رے ملک کی ترقی اور خدمت میں کر دار ادا کر نے کے اہل ہونگے اس لےئے بچوں کی بہتر تعلیم اور رہنمائی پر ہمارا انہماک ہونا چا ہے تعلیم کی فراہمی کے ساتھ ساتھ بچوں کی کردار سازی بھی کرناہوگی تاکہ وہ معاشر ے کا با قار شہری اور انتظام کار بن جائیں ۔

 

 

ایمز ٹی وی(صحت)کراچی میں ڈینگی سے مزید 13افراد متاثر ہوگئے ہیں۔ ڈینگی پریوینشن اینڈ کنٹرول پروگرام سندھ کی جاری کردہ ہفتہ وار رپورٹ کے مطابق گزشتہ ہفتے شہر کے مختلف اسپتالوں کی او پی ڈیز میں9 ایسے مریضوں کو لایا گیا جو ڈینگی سے متاثر تھے۔ ان میں سے 4مریضوں کو ڈینگی کی شکایت پر مختلف اسپتالوں میں داخل کیا گیا۔ رپورٹ کے مطابق رواں سال اب تک ڈینگی سے 30افراد متاثر ہو چکے ہیں۔ واضح رہے کہ گزشتہ سال بھی ڈینگی کے ہزاروں کیسز رپورٹ ہوئے تھے اور درجنوں ہلاکتیں ہوئی تھیں۔

 

 

ایمز ٹی وی (صحت)شہر میں تین روزہ انسداد پولیو مہم پیر کو اپنے پہلے روز جاری رہی، تاہم سہراب گوٹھ پر مقیم آئی ڈی پیز نے اپنے بچوں کو پولیو سے بچاؤ کی حفاظتی خوراک پلانے سے انکار کیا ہے۔ پیر کو مہم جاری رہی مہم کے دوران 188یونین کونسلوں کے 22لاکھ بچوں کو پولیو کی حفاظتی خوراک پلانے کا ہدف مقرر کیا گیا ہے۔ مہم کا افتتاح کمشنر کراچی نے کیا اور ضلعی انتظامیہ کو ہدایت دی کہ اپنے اپنے اضلاع میں پولیو مہم کو کامیاب بنانے کے لیے ہر ممکن اقدامات کریں تاہم کراچی میں پیر کو سراب گوٹھ پر واقع مقیم آئی ڈی پیز نے اپنے بچوں کو پولیو کی حفاظتی خوراک پلانے سے انکار کیا اس آبادی میں5800 جھونپڑیاں موجود ہیں۔ اس کچی آبادی میں 900 سے زائد 5 سال سے کم عمر کے بچے موجود ہیں. ان آئی ڈی پیز نے احتجاجاً اپنے بچوں کو پولیو کی خوراک پلانے سے انکار کیا ان کا کہنا تھا کہ ہماری کچی آبادی میں بچوں کے لیے کوئی اسکول قائم نہیں نہ ہی پینے کا پانی ہے لہذٰا اسکول نہ ہونے کی وجہ سے ان افراد نے اپنے بچوں کو پولیو کے قطرے پلانے سے انکار کر دیا۔ دریں اثناء کمشنر کراچی اعجاز احمد خان نے کہا ہے کہ انسداد پولیو کے لئے سنجیدہ کوششیں کی جارہی ہیں تمام متعلقہ ادارے پولیو کے خاتمہ کی جدوجہد میں مل کر کوششیں کر رہے ہیں۔ امید ہے پاکستان کو پولیو سے پاک ملک بنانے کی حکومت کی کوششیں جلد کامیاب ہوں گی۔ کمشنر کراچی نے تمام ڈپٹی کمشنرز کو ہدایت کی ہے کہ وہ پولیو کے خاتمہ تک اپنی کوششیں کو جاری رکھیں۔ پیر کو کمشنر کراچی اعجاز احمد خان کی ہدایت پر ڈپٹی کمشنر شرقی آصف جان صدیقی نے جنت گل اسپتال، جنت گل کالونی سہراب گوٹھ پر سال کی پہلی مہم کا افتتاح کیا۔ اس موقع پرخطاب کر تے ہوئے آصف جان صدیقی نے کہا کہ کمشنر کراچی کی قیادت میں ضلعی انتظامیہ کراچی سے پولیو کے خاتمہ کے لئے بھر پور کوششیں کر رہی ہے۔ انھوں نے کہا کہ مہم چھ روز جاری رہے گی۔کراچی کی تمام 188 یونین کونسلوں میں مہم پر عملدر آمد کیا جا ئے گا۔ مہم میں 22 لاکھ سے زائد بچوں کو پولیو کے قطرے پلائے جائیں گے۔ مہم میں 12ہزار سے زائد پولیو ٹیمیں فرائض انجام دیں گی۔ انھوں نے کہا کہ کمشنر کراچی کی ہدایت پر تمام ڈپٹی کمشنرز نے ڈسٹرکٹ پولیو کنٹرول روم کو فعال بنادیا ہے جس سے مانٹیرنگ موثر ثابت ہوئی۔ ڈپٹی کمشنر شرقی آصف جان صدیقی نے کہا کہ یونین کونسل نمبر چار گجرو حساس یونین کونسل میں شامل ہے۔ اس علاقہ میں انسداد پولیو کی کامیاب کوششیں حوصلہ افزا بات ہے۔ اس موقع پر کمشنر کراچی پولیو ٹاسک فورس کے کو آڑڈینیٹر ڈاکٹر نصرت علی، اسٹنٹ کمشنر آغا سراج، محکمہ صحت کے افسران، عالمی ادارہ صحت، یونیسف کے نمائندے اور پولیس کے افسران بھی موجود تھے۔